Local news

مرکزی وزیر مملکت مواصلات نے پانپور میں اِنڈین اِنٹرنیشنل ٹریڈ زعفران سپائس پارک کا دورہ کیا

Summary

متعدد وَفود کے ساتھ بات چیت کی پلوامہ/16 ستمبر 2021ئ مرکزی حکومت کے عوامی رَسائی پروگرام کے تحت مرکزی وزیر مملکت برائے مواصلات دیووسن چوہان نے آج اِنڈین اِنٹرنیشنل ٹریڈ زعفران سپائس پارک پانپور کا تفصیلی دورہ کیا اور وہاں […]

متعدد وَفود کے ساتھ بات چیت کی
پلوامہ/16 ستمبر 2021ئ
مرکزی حکومت کے عوامی رَسائی پروگرام کے تحت مرکزی وزیر مملکت برائے مواصلات دیووسن چوہان نے آج اِنڈین اِنٹرنیشنل ٹریڈ زعفران سپائس پارک پانپور کا تفصیلی دورہ کیا اور وہاں اُنہوں نے پروسسنگ یونٹ کے مختلف محکموں کا معائینہ کیا۔اُنہوں نے پارک میں ڈرائنگ ، گریڈینگ ، پیکنگ اور اِی ۔ نیلامی سینٹروںکا بھی معائینہ کیا۔وزیر مملکت مواصلات نے کہا کہ مرکزی حکومت کسانوں کو ہر ممکن مدد فراہم کرنے کے لئے کوشاں ہے ۔ اُنہوں نے کہا کہ کسانوں کوسپائس پارک کے قیام سے زعفران کی آمدنی دوگنی ہوگئی ہے ۔مرکز کسانوں کو ہرقسم کی سہولیات اور مدد فراہم کرے گا جس سے ہمارے کسانوں کی زندگی خوشحال ہوگی۔اُنہوںنے مختلف شراکت داروں سے بھی ملاقات کی جن میں فروٹ گروﺅرس ، این آر ایل ایم ،یوتھ ، سپورٹس ، ٹریڈرس ایسو سی ایشن ، صنعتی یونٹ ہولڈران شامل تھے اوراُنہوں نے ان کے مسائل سنے ۔ وفود نے اَپنے مطالبات اور عوامی اہمیت کے حامل کئی دیگر مسائل وزیر موصوف کے گوش گزار کئے۔وزیر موصوف نے وفود کے ساتھ بھی تبادلہ خیال کیا ۔اِس دوران وَفود نے وزیر کے سامنے اَپنی شکایات اور مسائل پیش کئے ۔ اُنہیں یقین دِلایا گیا کہ حکومت اِن وفود کے جائز مطالبات اور مسائل کو ازالہ کرنے کے لئے ترجیحی بنیادوں پر اُٹھائے گی۔اُنہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت پہلے ہی مختلف فلیگ شپ پروگراموں پر کام کر رہی ہے جس کا مقصد لوگوں کی سماجی اور معاشی صورتحال کو بہتر کرنا ہے اور نئی سکیموں کی تعداد بھی پائپ لائن میں ہے۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ وقت کا تقاضاہے کہ تمام فلاح وبہبود سکیموں کی بڑے پیمانے پر بیداری پیدا کی جائے تاکہ ان سکیموں کے فوائد نچلی سطح تک پہنچ سکیں۔اِس موقعہ پرناظم اطلاعات و تعلقاتِ عامہ راہل پانڈے ، ضلع ترقیاتی کمشنر بصیر الحق چودھری ، جوائنٹ ڈائریکٹر اطلاعات کشمیر اَنعام الحق صدیقی اور دیگر اَفسران بھی موجود تھے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *